بھارت میں خواتین اداکاروں کو جنسی درندگی کا نشانہ بنانے کے واقعات میں اضافہ

اپنی فلموں کی وجہ سے دنیا بھر میں مقبولیت حاصل کرنے والا بھارت اپنی خواتین اداکاروں کو جنسی درندگی کا نشانہ بننے سے نہیں بچا پارہا ۔بالی ووڈ کی خواتین اداکاروں نے سوشل میڈیا پر اعتراف کیا ہے کہ انہیں روز جنسی درندگی کا نشانہ بنایا جاتا ہے ۔ بھارت میں جہاں عام لڑکیوں کے ساتھ جنسی درندگی کے واقعات میں خطرناک حد تک اضافہ ہوا ہے وہی پربھارت کی پہچان سمجھی جانے والی بولی ووڈ انڈسٹری میں اپنی اداکاری کے جوہر دکھانے والی خواتین بھی جنسی درندگی کے مسائل کا شکار ہیں بالی ووڈ اداکارہ سپنا نے سوشل میڈیا پر بتایا ہے کہ جو کچھ تنوشری کے ساتھ ہوا وہ میرے ساتھ روز ہوتا ہے اور یاد دلاتی ہوں کہ شوٹنگ کے دوران مجھے بھی غیر مہذب لباس پہننے اور ڈانس اسٹائل کے لیے مجبور کیا گیا اس حوالے سے میں نے جہاں جہاں آواز اٹھائی میری آواز اور رائے کو دبا دیا گیا۔اپنی سوشل میڈیا پوسٹ میں اداکارہ سپنا نے لکھا ہے کہ میں وہ جو کچھ بتا رہی ہوں وہ میں دل سے محسوس کرتی ہوں میں تنوشری کی باتوں پر یقین رکھتی ہوں لیکن اہم بات یہ ہے جسے ہم بھول رہے ہیں کہ جب یہ سب ہورہا تھا تو باقی تمام خواتین کہاں تھیں۔


بھارتی فلم انڈسٹری کے حوالے سے سامنے آنے والی شکایات پر بھارتی تبصرہ نگاروں کا کہنا ہے کہ خواتین کو اپنے حق کے لیے آواز اٹھانی ہوگی اور حقائق سامنے لانا ہوں گے اگر انہوں نے خاموشی اختیار کیے رکھی تو اس طرح کے واقعات میں ملوث لوگوں کا حوصلہ بڑھ جائے گا ایسے واقعات کو رپورٹ ہونا چاہیے اور پولیس تو ایسے واقعات کی روک تھام کے لیے سخت کاروائی کرنی چاہیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں