چین سے 20 پاکستانی لڑکیاں وطن واپس پہنچ گئیں

 شادی کے دھوکے میں آکر چین جانے والی پاکستانی لڑکیوں میں سے بیس لڑکیاں پاکستان واپس پہنچ گئی ہیں ۔ان لڑکیوں نے پاکستان کے سفارتخانے سے رابطہ کرکے شکایت درج کرائی تھی چینی حکام نے ان کو واپس بھیجنے میں پاکستان حکام کی مدد کی 20 پاکستانی لڑکیاں چین میں مشکلات کا سامنا کرنے کے بعد بالآخر اپنے وطن لوٹ آئی ہیں یہ معصوم اور بولی والی پاکستانی لڑکیاں آپنے چینی شوہر کے ساتھ سنہرے مستقبل کا خواب آنکھوں میں سجائے چین گئی تھی لیکن انہیں نہیں معلوم تھا کہ وہ شادی کے نام پر ایک بہت بڑے فراڈ کا شکار ہوگئی ہیں چین پہنچ کر انہیں حالات کی سنگینی کا اندازہ ہوا کہ وہ ایک گینگ کے ہاتھوں پھنس گئیں ہیں اور انہیں شادی کے نام پر یہاں لاکر کسی اور مقصد کے لیے یرغمال بنا لیا گیا ہے ۔


پاکستان میں یہ اسکینڈل جیسے ہی سامنے آیا جن خاندانوں نے اپنی بیٹیاں چینی باشندوں کے ساتھ بیاہ کر چین روانہ کی تھی ان کے کان کھڑے ہوئے کچھ کہ حالات پہلے ہی خاندان اور رشتہ داروں کے عالم میں تھے وہ بھی بول اٹھے معاملہ سوشل میڈیا سے پرنٹ اور الیکٹرونک میڈیا پر پہنچا اور پھر حکومتی سطح پر اٹھایا گیا جس کے نتیجے میں فراڈ کا شکار ہونے والی پاکستانی لڑکیوں کی مدد کے لیے حکومت متحرک ہوئی چینی حکام نے بھی صورتحال کو بھانپ لیا چین میں پاکستانی لڑکیوں کی تلاش شروع ہوئی پاکستان سے جانے والی لڑکیوں کی پاکستان واپسی کا عمل شروع ہوگیا ہے سرکاری ذرائع کے مطابق 20 پاکستانی لڑکیاں چین سے پاکستان واپس پہنچ گئی ہیں ۔ایف آئی اے اور دیگر حکام پاکستانی لڑکیوں سے چین میں پیش آنے والے حالات اور وہاں موجود مزید پاکستانی لڑکیوں کے بارے میں معلومات حاصل کررہے ہیں تاکہ اگر وہاں پر مزید پاکستانی لڑکیاں موجود ہیں تو انکی مدد کی جا سکے اور اگر ہمیں واپس لانا ہے تو ان کی واپسی فوری طور پر یقینی بنانے کے اقدامات اٹھائے جا سکیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں