شبر زیدی بہترین انتخاب ہے منتخب حکومت کو فیصلے اور کام کرنے دیا جائے ۔ طارق حلیم

ایف پی سی سی آئی کے سابق نائب صدر اور بلک شپنگ کے چیف ایگزیکٹو طارق حلیم کا کہنا ہے کہ سید شبر زیدی کا بطور چیئرمین ایف بی آر انتخاب بہترین فیصلہ ہے وہ انتہائی ذہین قابل اور تجربہ کار شخص ہیں ایف بی آر کے معاملات اور ٹیکس کے امور پر ان کی گہری نظر اور دسترس ہے ۔پانامہ لیکس اور پاکستانی شہریوں کے آفشور اثاثوں کے موضوعات پر ان کی کتابیں اس بات کی دلیل ہیں کہ وہ اس شعبے میں کس قدر گہری معلومات رکھتے ہیں جیو پاکستان ڈاٹ کام کے نمائندہ وحید جنگ سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے طارق حلیم کا کہنا تھا کہ پاکستانی معیشت اس وقت ایک بحران سے گزر رہی ہے موجودہ حکومت اسے بہتر کرنے کی بھر پور کوشش کر رہی ہے یہ ایک منتخب اور مقبول عوامی حکومت ہے لہذا اس حکومت کو فیصلے اور کام کرنے کا موقع دیا جائے شبر زیدی کا انتخاب کر کے حکومت نے ایک درست فیصلہ کیا ہے اگر انھیں کام کرنے کا موقع ملا تو یقینی طور پر اس کے مثبت اور اچھے اثرات آئیں گے مجھ سے میں جتنے لوگ بھی شبر زیدی کو جانتے ہیں گواہی دیں گے کہ شبر زیدی اس عہدے کے لیے ایک بہترین اور موضوع ترین انتخاب ہیں۔


حکومت کو معیشت کی بہتری کے لیے ٹھوس پالیسیاں بنانی ہوگی ایف بی آر سمیت تمام اداروں کے اعلیٰ عہدوں پر چن چن کر اچھے ماہرین کو لانا ہوگا پرائیویٹ سیکٹر سے ایف بی آر کے چیئرمین کی تقرری ایک خوش آئند امر ہے پاکستان چین کے ساتھ مل کر معیشت کی بہتری اور بحالی کے لیے نئے سنگ میل طے کر سکتا ہے سی پیک واقعی ایک گیم چینجر ہے پاکستانیوں کو اس سے بھرپور فائدہ اٹھانا چاہیے اور اس کے لئے تیاری کرنی چاہیے پاکستان کو اپنے تجارت کے حجم کو بڑھانے پر توجہ مرکوز رکھنی چاہیے ۔ ہمیں ایڈ نہیں ٹریڈ چاہیے ہم نے بہت پیسے اور امداد لے لی اب ہمیں اپنے پیروں پر کھڑا ہونا چاہیے اور تجارت کو فروغ دینے کے لیے اپنی مصنوعات کی فروخت اور بہتر مارکیٹنگ کے لیے نئی منڈیاں تلاش کرنی چاہیے پاکستان میں قدرت نے بے پناہ ٹیلنٹ دیا ہے کسی شعبے میں بھی ہم دنیا سے پیچھے نہیں ہمارے لوگ دنیا میں مختلف شعبوں میں نام کما رہے ہیں ہمیں اپنے ٹیلنٹ کی قدر کرنی چاہئے اور اپنے نوجوانوں پر بھروسہ کرکے انہیں آگے آنے کا موقع دینا چاہیے ۔عمران خان کی صوبائی میں موجودہ حکومت سے عوام کو بے پناہ توقعات وابستہ ہیں اس حکومت کو کام کرنے کا موقع دیئے دینا چاہیے انشاءاللہ نتائج اچھے حوصلہ افزا اور مثبت ہونگے ان کا کہنا ہے کہ خزانہ بھرنے کے لیے حکومت کو ضروری اقدامات کرنے چاہیے دنیا کو دیکھنا چاہیے کہ دنیا کس طرح اپنے معاشی مفادات کا تحفظ کر رہی ہے۔


پاکستان میں جو صنعتی ڈالر کما کر دے سکتی ہیں ان کو مشاورت سے زیرو ریٹڈ کرنا چاہیے ان کی حوصلہ افزائی کرنی چاہیے اور انہیں بہتر ماحول فراہم کرنا چاہیے آخر میں انہوں نے جیوے پاکستان ڈاٹ کام کی جانب سے پاکستان کی معیشت درپیش چیلنجوں کی نشاندہی کرنے اور محب وطن پاکستانیوں کی جانب سے مفید اور مثبت تجاویز کو سامنے لانے اور اجاگر کرنے پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے جیوے پاکستان کی پوری ٹیم کی کاوشوں کو سراہا اور مستقبل میں مزید کامیابیوں کے لئے جیوے پاکستان کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں