گھروں کو توڑنے کی بجائے عدالت میں ہی وزارت چھوڑ دوں گا۔ سعید غنی کا بڑا اعلان

سندھ کے صوبائی وزیر بلدیات اور پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی نے بڑا اعلان کردیا ہے ان کا کہنا ہے کہ میں گھروں کو توڑنے کی بجائے عدالت میں ہیں وزارت سے استعفی دے دوں گا ۔ان کا کہنا ہے کہ عدالت نے بلایا ہے توضرورجاؤں گا ہم عدالتوں کا احترام کرتے ہیں ۔ایسی کوئی بات نہیں کی جس سے توہین عدالت کا پہلو نکلتا ہو پہلے بھی کئی دکانیں ٹوٹی ہیں ان کا متبادل نہیں دیا جا سکا جو بے روزگار ہو چکے ہیں ایسے کام کرنے کے لیے ہفتے اور مہینے لگتے ہیں وقت دیا جائے تو یہ کام بھی کیا جاسکتا ہے۔میں نے اسمبلی میں اور بھی جگہ بات کی تھی۔ عدالتی فیصلوں پر عمل کرنے پر پابند ہیں چاہیں فیصلہ پسند ہو یا نہ ہو ۔ عدالت کے سامنے حاضر ہوں گا۔


 
سمجھتا ہوں کوئی ایسی بات نہیں کی جو توہین عدالت  کے زمرے میں آتی ہو۔ گھروں کو توڑنے کے بجائے وزارت چھوڑنے کی بات پر قائم ہوں۔ گھروں کو توڑنا ممکن نہیں ہے کسی بھی حکومت کے لئے،  بہت ساری دکانیں ٹوٹیں جس کے باعث بہت سارے لوگ بے روزگار ہیں اب تک ہم ان لوگوں کو روزگار فراہم نہیں کر سکے ہم اس کام کو کر سکتے ہیں اگر وقت دیا جائے، یہ چند ہفتوں اور چند مہینوں کی بات نہیں ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں