سندھ میں الگ صوبے کی بات کرکے عوام کو آپس میں لڑانے کی کوشش کی گئی، سعید غنی

کراچی-صوبائی وزیربلدیات سعید غنی نے گورنرعمران اسماعیل سے سندھ کی تقسیم کے متعلق اپنے مبینہ انٹرویو پر مستعفی ہونے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاہے کہ گورنر سندھ اخلاقی جواز کھوچکے ہیں،صوبے کے گورنر کا آئینی عہدہ ایسی بات کرنے کی اجازت نہیں دیتا،ایم کیو ایم اور پی ٹی آئی ایک دوسرے کی بی ٹیم بن گئے ہیں۔ وہ کراچی ایڈمنسٹریشن سوسائٹی کی دعوت افطارمیں صحافیوں سے گفتگو کررہے تھے۔ سعید غنی کا کہنا ہے کہ تھا کہ سندھ میں الگ صوبے کی بات کرکے عوام کو آپس میں لڑانے کی کوشش کی گئی ضرورت پڑنے پر ایم کیو ایم پی ٹی آئی کی اور پی ٹی آئی ایم کیو ایم کی بی ٹیم بن جاتی ہے۔


انہوں نے کہاکہ وفاقی حکومت کی ناکام معاشی پالیسیوں کی وجہ سے مہنگائی کا طوفان ہے کراچی میں متعلقہ وزراء چھاپے مار رہے ہیں ،مہنگائی کی ذمہ دار وفاقی حکومت ہے ،پیٹرول، گیس ،ڈیزل ، کے نرخ بڑھیں گے تو مہنگائی ہوگی۔ انہوں نے کہاکہ کراچی کی سڑکوں کی حالت پہلے سے بہتر ہے ترقیاتی منصوبے مکمل ہونے سے کراچی کے شہریوں کومزید سہولت حاصل ہوگی انہوں نے کہاکہ کراچی کی ترقی کے لیے نئے بجٹ میں مزید ترقیاتی اسکیمیں شامل کی جائیں گی اورکراچی کی ترقی پرکوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں