سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن کے سی ای او ڈاکٹر منہاج اے قدوائی دوہری شہریت کے حامل نکلے

سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن کا ایکٹ 2014 میں منظور ہوا تھا لیکن اسے 2018 تک فعال نہ بنایا جاسکا اور فروری 2018 میں اس نے باقاعدہ کام شروع کیا اس کے سی ای او ڈاکٹر منہاج اے قدوائی ہیں اور ان کی دوہری شہریت کا انکشاف ہوا ہے انہیں پاکستان میں ویزا فری انٹری کا حق بھی دیا گیا ہے ۔یاد رہے کہ سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن کا بنیادی کام سندھ بھر میں کام کرنے والے تمام سرکاری اور نجی ہسپتالوں کی رجسٹریشن اور مونیٹرنگ ہے اور اسپتالوں میں کوالٹی علاج کی فراہمی کو یقینی بنانا ہے


ہسپتالوں میں عملے کی تربیت کو یقینی بنانا بھی اسی سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن کا بنیادی کام ہے صوبے بھر میں حکیموں اور عطائی ڈاکٹروں پر نظر رکھنا بھی اسی کا کام ہے مختلف پروفیشنل ایسوسی ایشنز اور کونسل سے کوآرڈینیشن رکھنا بھی اسی ادارے کا کام ہے ۔کراچی کے دارالصحت ہسپتال میں پیش آنے والے واقعات کی شکایات سے لے کر دیگر اسپتالوں میں پیش آنے والے واقعات کی شکایت تک اور لاڑکانہ میں ایڈز کے پھیلاؤ بچوں میں انجکشن لگانے والے ڈاکٹر کے اپنے ایڈز زدہ ہونے کے واقعہ سے یہ سوال اٹھے ہیں کہ سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن کیا کام کر رہا تھا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں