اسد عمر کے لیے گورنر پنجاب کے عہدے کی پیشکش

اسد عمر کو گورنر پنجاب بننے کی پیشکش کر دی گئی ہے ۔حکومتی ذرائع کے مطابق اسد عمر کو گورنر پنجاب بننے کے لیے راضی کرنے کی کوشش کی جارہی ہے وزیراعظم عمران خان گورنر پنجاب چوہدری سرور سے سخت ناراض ہیں اور ان کو تبدیل کرنے کا فیصلہ کر چکے ہیں جبکہ چودھری سرور اپنے بچاؤ کے لیے ہاتھ پاؤں مار رہے ہیں لیکن انہیں وزیراعظم عمران خان سے ملاقات میں کامیابی حاصل نہیں ہوسکی ذرائع کے مطابق عمران خان ونر پنجاب کے لیے جن متبادل ناموں پر غور کررہے ہیں ان میں ایک نام اسد عمر کا حامل ہے اگر اسدعمر وفاقی کابینہ میں واپس آنے پر راضی نہیں ہوتے تو پھر انہیں گورنر پنجاب کے عہدے کے لیے راضی کرنے کی کوشش کی جارہی ہے اور انہیں حکومتی عہدہ سنبھالنے پر رضامند کرنے کے لئے خود وزیراعظم عمران خان نے ان سے بات کی ہے۔


پاکستان تحریک انصاف کو اسد عمر کے وزارت خزانہ سے الگ ہونے سے بہت سیاسی نقصان ہوا ہے پارٹی کارکنوں کے لئے یہ بہت بڑا دھچکا تھا اہم رہنما بھی ابھی تک اس فیصلے کو ہضم نہیں کر سکے اور انہیں یقین ہی نہیں آرہا کہ اسد عمر اب کبھی نہ میں نہیں ہیں پارٹی کارکنان سے لےکر وفاقی وزراء تک سب کی یہ خواہش ہے کہ اسد عمر کو واپس لایا جائے اسد عمر کو راضی کیا جائے اور وہ وفاقی کابینہ کا حصہ بنے جب کہ اسد عمر کے اپنے خدشات ہیں جن کا اظہار وہ وزیراعظم عمران خان سے کھل کر کر چکے ہیں اس کے باوجود وزیراعظم کی خواہش ہے کے اسد عمر حکومتی عہدہ سنبھالیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں