قومی مقاصد قربانی مانگتے ہیں ۔ مریم نواز جیل کے سفر میں والد کے ساتھ جائیں گی

سابق وزیراعظم نواز شریف جیل رولز کی پابندی کرتے ہوئے شام 6 بجے سے پہلے جیل کوٹ لکھپت پہنچ جائیں گے نوازشریف کی صاحبزادی اور پاکستان مسلم لیگ نون کی نائب صدر مریم نواز شریف نے اعلان کیا ہے کہ وہ خود اپنے والد میاں نوازشریف کو چھوڑنے ان کےساتھ جیل پہنچے گی سوشل میڈیا پر اپنے پیغام کے ذریعے انہوں نے اپنے جذبات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جتنا کٹھن فیصلہ ایک باپ کا بیٹی کا ہاتھ تھامے جیل جانے کا تھا اتنا ہی کٹھن ایک بیٹی کا اپنے محبوب والد کو جیل چھوڑ کر آنا ہے مگر میں جاؤں گی کیونکہ مقصد قومی ہے اور باپ بیٹی کے رشتوں سے کہیں بڑا ہے انہوں نے کہا کہ قومی مقاصد قربانی مانگتے ہیں کل انشاءاللہ میں کارکنوں کے ساتھ ہونگی۔


واضح رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کو 26 مارچ کو سپریم کورٹ نے طبی بنیادوں پر چھ ہفتے کے لیے عبوری ضمانت دی تھی جس کے بعد نواز شریف کی ضمانت کی مدت سات مئی کو ختم ہورہی ہے اور ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈپٹی کمشنر آفس لاہور کی جانب سے نون لیگی رہنماؤں کو نئے فیصلے سے آگاہ کردیا گیا ہے کہ اب نواز شریف کو ساتھ بھائی کی شام چھ بجے سے پہلے کوٹ لکھپت جیل پہنچنا ہے ۔نواز شریف اور مسلم لیگ نون کی قیادت کو آگاہی دی گئی ہے کہ جیل کے قوانین پر عمل کیا جائے اور نوازشریف بیر کے بند ہونے سے پہلے جیل پہنچ جائیں مسلم لیگ ہیں ذرائع کے مطابق سابق وزیراعظم کے گھر سے ضروری سامان پہلے ہی جیل پہنچا دیا گیا ہے جب کہ پولیس حکام نے نوازشریف کی جیل واپسی کیلئے حفاظتی پلان تیار کرلیا ہے اس موقع پر ان کے روڈ پر سخت سکیورٹی تعینات کی جائے گی مسلم لیگ نون نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کو ایک جلوس کی شکل میں جیل لے کر جائیں گے اور مریم نواز شریف جلوس کی قیادت کریں گی جبکہ حمزہ شہباز شریف کے بارے میں بتایا جا رہا ہے کہ وہ سابق وزیراعظم کی گاڑی چلائیں گے۔


اپنا تبصرہ بھیجیں