پیمرا کے تازہ آکشن نے میڈیا ہاؤسز مالکان اور حکومت کے پروپیگنڈے کو ایکسپوز کر دیا

پیمرا کی جانب سے کیے گئے تازہ اکشن نے کرنٹ افیئرز چینلز کے خلاف کیے جانے والے میڈیا ہاؤسز کے مالکان اور حکومت کے اس منفی پروپیگنڈے کو ایکسپوز کر دیا ہے جس میں یہ تاثر دیا جارہا تھا کہ لوگوں نے کرنٹ افیئرز چینلز کو دیکھنا کم کردیا ہے اور ملک بھر میں کرنٹ افیئرز چینلز نے اپنی مقبولیت کھو دی ہے اور اس کی جگہ انٹرٹینمنٹ چینلز نے لے لی ہے کیمرہ نے 70 ٹی وی چینلز کے لائسنس دینے کے لیے پیش کشیں طلب کی جن میں کرنٹ افیئرز کے آٹھ اسپورٹس کے چار اور انٹرٹینمنٹ کے گیارہ چینلز کے لیے بولی لگائی گئی ۔یہ حیران کن حقیقت سامنے آئی کے کرنٹ افیئرز چینلز کے لئے سب سے اونچی بولی لگائی گئی ۔سینٹورس مال اسلام آباد کے مالک نے کرنٹ افیئرز چینل کے لیے 28 کروڑ روپے یعنی 280 ملین روپے کی بولی دی۔


جبکہ انٹرٹینمنٹ چینلز کے لیے آنے والی بولی کی رقم بہت کم رہی جس کا اندازہ آپ اس بات سے لگا سکتے ہیں کہ زیادہ سے زیادہ 5.5 ملین ریلوے کی بولی لگی ۔تازہ اوشن سے یہ حقیقت عیاں ہوگئی ہے کہ پاکستان میں آج بھی انٹرٹینمنٹ چینلز کی نسبت کرنٹ افیئرز چینلز کو زیادہ پسند کیا جاتا ہے زیادہ مقبولیت رکھتے ہیں اور ان کے ا لائسنس کے حصول کے لیے زیادہ مقابلہ ہے اسی لئے کرنٹ افیئرز چینلز کی بولی زیادہ لگی ہے اور انٹرٹینمنٹ چینلز کی بولی انتہائی کم رقم کی سامنے آئی ہے تازہ صورتحال سے یہ بات بھی واضح ہوتی ہے کہ جو لوگ یہ پروپیگنڈا کر رہے تھے کہ پاکستان میں کرنٹ افئیر کے ٹی وی چینلز دیکھنے والوں کی تعداد کم ہو گئی ہے اور ان کی مقبولیت میں نمایاں کمی آئی ہے اور ان کی جگہ انٹرٹینمنٹ چینلز نے لے لی ہے تو ایسے تمام پروپیگنڈے یکسرمسترد ہوگئے ہیں اور پیمرا کے اپنے اوکشن نے یہ بات ثابت کر دی ہے کہ انٹرٹینمنٹ چینل ہوائیاں اسپورٹس چینل ان کے مقابلے میں کرنٹ افیئرز چینلز کی مانگ مقبولیت ڈیمانڈ اور بولی سب سے اونچی ہے سب سے زیادہ ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں