کپتان نے پاکستان کو آئی ایم ایف کی کالونی بنا دیا

عمران خان کی حکومت آئی ایم ایف کی ڈکٹیشن پر چل رہی ہے پہلے وزیر خزانہ کو بدلہ پھر گورنرسٹیٹ بینک کو ہٹایا اب بھی عالمی تبدیلیاں کررہے ہیں عملی طور پر کپتان نے پاکستان کو بدقسمتی سے آئی ایم ایف کی کالونی بنا دیا ہے ہم اس صورتحال پر اسمبلی کے اندر بھرپور احتجاج کریں گے ۔ ان خیالات کا اظہار پاکستان مسلم لیگ نون کے رہنما اور پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل احسن اقبال نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ گورنر اسٹیٹ بینک سے زبردستی استعفیٰ لیا گیا ہے آئی ایم ایف کے نوکر کو معیشت پر مسلط کیا جارہا ہے آئی ایم ایف کے ملازم کو کابینہ میں شامل کرلیا گیا ہے۔ گیس بجلی پٹرول اور ہر شے کی قیمت بڑھ چکی ہے سبزیاں پھل گوشت مرغی تعالی ہر چیز کی قیمت آسمان سے باتیں کررہی ہے حکومت نے عام آدمی کی زندگی اجیرن بنا دی ہے۔


ایسا نہ اقبال کا کہنا تھا کہ اب لوگوں کو نواز شریف کی حکومت کے اچھے دن یاد آرہے ہیں ملک اچھے خاصی ترقی کی شاہراہ پر گامزن ہو چکا تھا بدقسمتی سے پورے سسٹم کو غیر مستحکم کرکے ایسی تبدیلی لائی گئی جس کی وجہ سے آج عوام کی زندگی مصیبت میں گر گئی ہے معیشت سخت بحران اور خطرے میں ہے موجودہ حکومت کے پاس ملک کو آگے لے جانے کے لیے نہ کوئی حکمت عملی ہے نہ بنانا نہ ڈیم سچ یہ ہے کہ یکم اپریل 2018 کے بعد سے ملک میں کوئی ترقیاتی سرگرمی نہیں ہورہی ۔ملک میں جتنے بھی بجلی کے کارخانے لگے یا ترقیاتی اسکیمیں ہوئی اس موٹروے اور ڈویلپمنٹ منصوبے نظر آئے وہ سب کے سب نواز شریف دور میں شروع کیے گئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں