15

پاکستانی خصوصی نوجوان بھرپور صلاحیتوں کے حامل ہیں۔ گورنر سندھ 

اسپیشل اولمپک ورلڈ گیم میں پاکستانی دستہ کی شمولیت خوش آئند ہے، امید ہے گولڈ میڈلز جیتے گے۔ عمران اسماعیل

وزیر اعظم سے ملاقات میں ان بچوں کے لئے اسپیشل پیکج کے لئے بات کروں گا۔نیشنل سانگ کی افتتاحی تقریب سے خطاب

  گورنرسندھ عمران اسماعیل نے کہا ہے کہ پاکستان میں موجود اسپیشل بچے خداداد صلاحیتوں میں مالا مال ہیں ضرورت اس امر کی ہے کہ ان کی صلاحیتوں کو مزید اجاگر کرکے انھیں معاشرے کا کارآمد شہری بنایا جائے اس ضمن میں کھیلوں کی مثبت سرگرمیوں کے ذریعہ ان نوجوانوں کو مثبت سمت گامزن کیا جا سکتا ہے ۔ ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے اسپیشل اولمپک پاکستان کے تحت نیشنل سانگ کی افتتاحی تقریب بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اسپیشل اولمپک ورلڈ گیم میں پاکستان سمیت 195ممالک حصہ لے رہے ہیں جس میں پاکستان کے طرف سے 92 خصوصی بچے اور نوجوان شرکت کریں گے۔ گورنرسندھ نے مزید کہا کہ اسپیشل اولمپک ورلڈ گیم میں پاکستانی دستہ کی شمولیت خوش آئند ہے، خصوصی بچوں کا بیرون ملک جا کر کھیلوں کی سرگرمیوں میں حصہ لینے پر مبارک باد پیش کرتاہوں ، امید ہے کہ شرکت کرنے والے بچے ملک و قوم کا نام روشن مزید کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ مخیر ادارہ اسپیشل اولمپک پاکستان ( ایس او پی) کی کاوشیں قابل تحسین ہیں ،30 برس سے خصوصی بچوں کو کھیلوں کی سرگرمیوں میں شرکت کرانا ایس او پی کا قابل فخر کام ہے ۔ انہوں نے یقین دہانی کروائی کہ وہ وزیر اعظم سے ملاقات میں ان بچوں کے لئے اسپیشل پیکج کے لئے بات کرے گے ۔انہوں نے مزید کہا کہ میری دعائیں پاکستانی بچوں کے ساتھ ہیں میری خواہش ہے کہ پاکستانی بچے گولڈ میڈلز جیت کر پاکستان آئیں اورگولڈ میڈلز جیتنے والے بچوں کا میں خود ایئر پورٹ پر استقبال کروں گا ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئر پرسن ایس او پی رونق لاکھانی نے کہا کہ پاکستانی دستہ 8مارچ کو ابوظہبی روانہ ہوگا، ان کی بھرپور حوصلہ افزائی کے لئے تقریب کا انعقاد کیا گیا۔

کیٹاگری میں : Home

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں