16

حکومت سندھ نے جما عت الدعوة اور فلاح انسانیت فائونڈیشن کے مدارس اور فلا حی ادا روں کو اپنی تحویل میں لے لیا ہے ۔بیرسٹر مر تضیٰ وہاب

کراچی ۔ وفاقی حکومت کی جانب سے جماعت الدعوة اور فلاح انسانیت فاﺅنڈیشن کو کالعدم قرار دیئے جانے کے فیصلے کے بعد حکومت سندھ نے دونو ں تنظیموں کے زیر انتظام چلنے والے مدارس اور فلاحی اداروں کو اپنی تحویل میں لے لیا ہے یہ ادا رے اب سندھ حکومت کی زیر نگرا نی چلا ئے جا ئیں گے۔ اس بات کا اظہار مشیر اطلاعات قانون و اینٹی کرپشن بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے اپنے ایک بیان میں کیا۔ انہوں نے کالعدم قرا ر دیئے جانے والی تنظیموں کے زیر انتظام چلنے والے ادا روں کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ سندھ حکومت کالعدم تنظیموں کے 31 اسکولز کا کنٹرول اس ہفتے سنبھالے گی جن میں سے 10 کراچی ڈویژن، حیدرآبا د 3، مٹیا ر ی 2، جا مشورو 1، میرپور خا ص 3، سانگھڑ 4، ٹنڈو الہیا ر1، بدین 3، تھرپار کر 1،شہید بے نظیر آباد 2 اور قمبر شہداد کوٹ میں 1اسکول قا ئم ہے۔ اسی طرح دونوں کالعدم تنظیموں کے 9 ہسپتال چلائے جارہے ہیں جن میں 5 کراچی ڈویژن ایک حیدرآباد ڈویژن ایک میرپور خاص ڈویژن اور دو تھرپا ر کر میں قائم ہیں اسکے علاوہ 16مدارس بھی ان تنظیموں کے زیر انتظام چلائے جارہے تھے جن میں سے 9 کرا چی ڈویژن، ایک مٹیاری، ایک بدین، ایک تھرپا رکر، ایک نوشہروفیروز اور 3 شہید بے نظیرآبا د میں قائم ہیں۔ مشیر اطلا عا ت بیرسٹر مرتضیٰ وہا ب نے مزید کہا کہ کنٹرو ل میں لئے گئے ان ادا رو ں کو چلا نے کےلئے حکومت کی جانب سے صوبائی کمیٹی قائم کردی گئی ہے جس کے چیئرمین سیکریٹری داخلہ ہونگے جبکہ ایڈیشنل آئی جی پی اسپیشل برانچ، اسپیشل سیکریٹری ایجوکیشن، اسپیشل سیکریٹری ہیلتھ اور چیف ایڈمنسٹریٹر اوقاف کمیٹی کے ممبرز ہونگے جبکہ ڈویژنل کمیٹی میں (صرف کراچی ڈویژن کےلئے )چیئرمین کمشنر کراچی جبکہ ایڈیشنل آئی جی پی کراچی، محکمہ تعلیم، صحت اور اوقاف کے ڈویژنل سربراہان کمیٹی کے ممبر ہونگے۔ چیئرمین کمشنر کراچی ہونگے۔ اسی طرح ضلعی کمیٹی میں ڈپٹی کمشنر، چیئرمین اور محکمہ تعلیم،صحت اور اوقاف کے ضلعی سربراہان کمیٹی کے ممبر ہونگے ۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کے قوانین کی پاسداری دنیا کے تمام ممالک پر عائد ہوتی ہے اور پا کستان اس حوالے سے اپنا بھرپور کردار ادا کر رہا ہے جس کو دنیا بھر میں سراہا گیا ہے تاہم عوام سے بھی اس ضمن میں تعاون کی درخواست کی جاتی ہے۔بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے مزید کہا کہ اس حوالے سے جو شخص بھی رکاوٹ بنے گا اس سے قانون کے مطابق نمٹا جائے گا اور حراست میں لیا جائے گا۔ اب اسکے لئے کسی کوپریشانی کی ضرورت نہیں کیونکہ ان اداروں کی تمام فنڈنگ اب سندھ حکومت کریگی۔ مشیر اطلاعات نے مزید کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جدوجہد میں ہمارے ملک پاکستان نے بے مثال قربانیاں دی ہیں اور ہماری پاک فوج اور دیگر سیکیورٹی کے اداروں کے اہلکاروں نے اپنی جانوں پر کھیل کے دہشت گردی کے خلاف جدوجہد میں اپنا حصہ ڈالا ہے۔ ہماری مسلح افواج بے مثال صلا حیتو ں کی حامل ہے ۔

کیٹاگری میں : Home

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں