27

باقر رضا کو گورنراسٹیٹ بینک بنانے کے لیے آئی ایم ایف کی ایم ڈی کرسٹین لیگارڈ نئے وزیراعظم عمران خان کو فون کیا تھا

گورنر اسٹیٹ بینک طارق باجوہ کو ہٹا کر ان کی جگہ رضا باقر کو یہ اہم ترین ذمہ داری سونپنے کا فیصلہ کب اور کہاں ہوا اس حوالے سے انکشاف ہوا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کو آئی ایم ایف کی مینیجنگ ڈائریکٹر کرسٹین لیگارڈ نے خود فون کیا اور کہا کہ رضا باقر بہترین افسر ہیں۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت پارٹی اور اتحادی ارکان کے اجلاس کی اندرونی کہانی میڈیا پر سامنے آگئی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے اجلاس کے دوران گورنرسٹیٹ بینک رضا باقر کی خصوصی تعریف کی اور کہا کہ آئی ایم ایف کرسٹین لیگارڈ نے مجھے فون کیا اور کہا کہ رضا باقر بہترین افسر ہیں انہوں نے مزید کہا کہ رضا باقر کی پیشہ ورانہ مہارت کی تعریف آئی ایم ایف کو کام بھی کرتے ہیں۔


یاد رہے کہ جب گورنر اسٹیٹ بینک طارق باجوہ کو ان کے عہدے سے ہٹایا گیا اور ان کی جگہ رضا باقر کا اعلان ہوا تو معاشی پالیسیوں پر گہری نظر رکھنے والے ماہرین نے اس پر حیرت کا اظہار کیا تھا اور یہ تفصیل سامنے آئی تھی کہ طارق  باجوہ آئی ایم ایف کی سخت شرائط ماننے کی راہ میں رکاوٹ بنے ہوئے تھے اسد عمر کے بعد طارق باجوہ کا ہٹایا جانا بھی ضروری تھا اور آئی ایم ایف نے اپنا ہی بندہ باقر رضا پاکستان کو اسٹیٹ بینک کے گورنر کے طور پر دے دیا ہے اسی صورتحال پر اپوزیشن کی جانب سے یہ کہا گیا تھا کہ اب آئی ایم ایف سے مذاکرات خود آئی ایم ایف کر رہا ہے حکومت پاکستان نہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں