39

آصف زرداری کی جانب سے ساتویں درخواست ضمانت ۔ ہریش کمپنی کیس میں گرفتاری کا خدشہ

اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق صدر آصف علی زرداری کی عبوری ضمانت میں ایک مرتبہ پھر توسیع کردی ہے سابق صدر آصف علی زرداری کی جانب سے اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر کی گئی ضمانت کی درخواستوں کی تعداد سات ہوگئی ہے آصف زرداری کے وکلاء کو خدشہ ہے کہ نیب ان کے مؤکل کو ہریش کمپنی کیس میں گرفتار کر سکتی ہے سابق صدر آصف علی زرداری کی جانب سے ہریش کمپنی اور جوائنٹ وینچر کے اس میں ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر کی گئی ہے نیب نے 15 تاریخ کی تاریخ مقرر کر رکھی ہے اور وکلاء کو خدشہ تھا کہ اس روز ہو آصف زرداری کو گرفتار کر سکتی ہے لہذا ہائیکورٹ سے درخواست ضمانت قبل از گرفتاری دائر کرکے ضمانت حاصل کرنے کی استدعا کی گئی جسے منظور کرلیا گیا عدالت نے دو درخواستوں پر عبوری ضمانت 22 مئی تک جبکہ اوپن 225 انکوائری میں عبوری ضمانت 12 جون تک اور پارک لین کیس میں ضمانت 12 جون تک توسیع کردی۔


قانونی حلقوں میں اس حوالے سے تبصرے ہو رہے ہیں کہ آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کو نیب ایک ہی دن گرفتار کرنے کی تیاریاں کررہی ہے اور دونوں کے خلاف مقدمات کو ایک ہی تاریخ پر فکس کی بات ہورہی ہے۔سیاسی ماہرین کا کہنا ہے کہ جس طرح پنجاب کے لیڈر نواز شریف کو ان کی صاحبزادی کے ہمراہ گرفتار کیا گیا تھا اسی طرح سندھ کے لیڈر آصف زرداری کو ان کی ہمشیرہ کے ہمراہ گرفتار کیا جا سکتا ہے ۔سیاسی مبصرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ ایک ہی وقت میں نواز شریف اور آصف زرداری کو جیل بھیجنا حکومت کے لیے خطرناک ہو سکتا ہے یہ قیاس آرائیاں ہوتی رہی ہیں کہ ایک وقت میں ایک جیل میں رہے گا اور ایک جلسے باہر ۔اب تک نوازشریف جیل میں اور آصف زرداری جیل سے باہر ہیں اور اگر آصف زرداری کی گرفتاری عمل میں لائی جاتی ہے تو ممکن ہے اس وقت نواز شریف کی ضمانت منظور ہو جائے۔ قانونی ماہرین کے مطابق مقدمات عدالتوں میں ہیں اس لئے اس پر تبصرے نہیں کیے جاسکتے فیصلہ عدالت میں ہونا ہے ۔سیاسی لوگ سیاسی انداز میں باتیں کرتے ہیں لیکن مقدمہ قانون کے مطابق عدالتوں میں فیصلے تک پہنچتے ہیں۔


نیب کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا ہے کہ آصف زرداری کے خلاف انکوائری کے میں مجموعی طور پر22 انکوائری اور انویسٹیگیشن بی میں تین ریفرینسز اور ریفرنس میں ایک ریفرنس زیر تفتیش ہے واضح رہے کہ جعلی اکاؤنٹس کیس میں آصف زرداری کی 15 مئی تک بولی ضمانت تھی عدالت میں آصف زرداری کیساتھ اور فریال تالپور کی تین درخواستیں ضمانت کے لئے لگی ہوئی ہیں نیب کی جانب سے دو کالت نوٹس بھی جاری کئے گئے ہیں جس میں آصف علی زرداری نے کل پیش ہونا ہے جعلی اکاؤنٹس کیس میں نیب نے اپنا تحریری جواب کے سامنے ہائی کورٹ میں جمع کرادیا ہے ذرائع کے مطابق تحریری جواب 11 صفحات پر مشتمل ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں