47

بہتر تھا آپ خودکشی کرلیتے ۔ آئی ایم ایف سے معاہدے پر وزیراعظم عمران خان کو نون لیگ کا جواب

عمران خان کی حکومت اور آئی ایم ایف کے درمیان معاہدے کو اپوزیشن جماعتوں نے مسترد کردیا ہے اپوزیشن جماعتوں نے آئی ایم ایف سے ڈیل قرار دیتے ہوئے اس معاہدے کو مسترد کردیا اور کہا کہ پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے۔ پاکستان مسلم لیگ نون میں موقف اختیار کیا ہے کہ آئی ایم ایف سے معاہدہ کرنے سے بہتر تھا کہ وزیراعظم عمران خان آپ خودکشی کرلیتے کیونکہ آپ نے اپوزیشن کے دنوں میں خود کہا تھا کہ آئی ایم ایف سے معاہدہ کرنے سے بہتر ہوگا کہ میں خودکشی کر لوں۔ پاکستان مسلم لیگ نون کی رہنما اور سیکرٹری اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ عمران صاحب اپنے ملک کو صرف چھ ارب ڈالر میں آئی ایم ایف کے حوالے کردیا یہ عمران خان کی نااہلی اور نالائقی ہے جس نے ملک کو آئی ایم ایف میں گروی رکھ دیا ہے۔ مسلم لیگ نون کی رہنما نے کہا کہ آئی ایم ایف کا آئی ایم ایف سے معاہدہ کامیاب ہوا ہے اور عوام پر مہنگائی کا بم گرا دیا گیا ہے آئی ایم ایف کی نئی شرائط سے مہنگائی غربت اور بے روزگاری کا طوفان آئے گا ایک ہزار ارب روپے کے اضافی ٹیکس لگائے جائیں گے۔


ان کا کہنا تھا کہ ایک اچھی قیادت میں اور نہ لقادۃ میں یہی فرق ہے کہ نوازشریف ملک میں 60 ارب ڈالر کے ترقیاتی منصوبے سی پیک لے کر آئے تھے اور عمران خان کی نااہل حکومت نے چھ ارب ڈالر کے لیے ملکوں ایم ایف کے پاس گروی رکھ دیا ہے ۔دوسری طرف پاکستان پیپلزپارٹی نے بھی آئی ایم ایف کے ساتھ کیے گئے حکومتی معاہدے کو پارلیمنٹ میں پیش کرنے کا مطالبہ کردیا ہے ۔پیپلز پارٹی کی رہنما شیری رحمان نے مطالبہ کیا ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ کیا گیا معاہدہ عوام کے سامنے لانے کے لیے پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے ان کا کہنا تھا کہ لگتا ہے معاہدے سے مہنگائی کا سونامی آنے والا ہے کہیں یہ مہنگائی کا سونامی ہودیس حکومت کو نہ لے ڈوبے پیپلزپارٹی کے رہنما نفیسہ شاہ کا کہنا ہے کہ پارلیمنٹ کو نظرانداز کر کے آئی ایم ایف سے ڈیل کو مسترد کرتے ہیں اہم ریاستی اداروں پر آئی ایم ایف کے تنخواہ دار مسلط کر دیے گئے ہیں تبدیلی کا سونامی لانے والے ملک میں مہنگائی کا سونامی لا چکے ہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں